درد کا درد سے وصل بھی درد ہے
درد کے لمس کی اصل بھی درد ہے
درد محبت، درد ہی ماہی
درد ہی منزل درد ہی راہی
درد کی درد سے کیسی جدائی
درد خدا ہے، درد خدائی
درد ہے آنکھیں، درد ہی سپنا
درد ہے آنسو، درد تڑپنا
درد کے مالک درد کی خو دے
ہر اک آہ کو اللہ ھو دے
ہر اک آہ کو اللہ ھو دے
درد ہی تسبیح، درد ہی مالا
درد تعارف، درد حوالہ
درد ہی میں ہوں، درد ہی تو ہے
درد تیمم، درد وضو ہے
درد عبادت، درد ہی خو ہے
درد تجلی، درد نمو ہے
درد کے لمس کی باتیں درد ہیں
دن بھی درد ہیں، راتیں درد ہیں
درد ہی ساگر، درد ہی ساحل
درد کی چپ میں، درد ہی شامل
درد کی لذت درد ہی دے گی
درد کی عادت درد ہی دے گی
درد ہی حجرہ، درد ملنگ ہے
درد کہانی درد کے سنگ ہے