رات کے پچھلے پہر اٹھنے والی روحانی لہر ساحل شعور تک آتے آتے اس قدر سیانی ہو جاتی ہے کہ روح کا سارا کیف و سرور، طرب و کرب اور سوزوساز قلزم کو واپس لوٹا دیتی ہے۔
ساحل کی گیلی ریت پہ رہ جانے والی رنگ برنگی سیپیاں مال غنیمت ہیں۔
قلبی واردات کی ہیئت و ماہیت، فکروشعور کا جمالیاتی ارتباط اور اظہار و ابلاغ کے ممکنہ ذرائع مل کر بھی گہرے پانیوں کا راز افشا نہیں کر پاتے۔
میں اور حی و قیوم
رات کا پچھلا پہر
گہرے پانیوں میں ڈوبتی محبتوں کی سرگوشیاں۔۔۔
رنگ برنگی سیپیوں کے تسلی بخش نظارے
اوراپنے حصے کی معنوی تلاش کا
روحانی اضطراب
محبتیں، زندہ باد